398

پاکستان کے معروف مصنفین نسیم درمانوی’سید عارف نوناری کی نارروال کی تاریخ پر منفرد’مقبول اور ضخیم کتاب "چڑھتے سورج کی سر زمین "نارووال کا احوال (گورداسپور سے کرتار پور تک) کا دوسرا ایڈیشن ترامیم اور اضافوں کے ساتھ شائع ہو گیا

نارووال/لاہور (پ ر) پاکستان کے معروف مصنفین نسیم درمانوی’سید عارف نوناری کی نارروال کی تاریخ پر منفرد’مقبول اور ضخیم کتاب "چڑھتے سورج کی سر زمین "نارووال کا احوال (گورداسپور سے کرتار پور تک) کا دوسرا ایڈیشن ترامیم اور اضافوں کے ساتھ شائع ہو گیا اسے پاکستان کے مشہور پبلشر مکتبہ جدید 14 ایمپریس روڈ لاہور نے شائع کیا ہے687 صفحات پر مشتمل کتاب کو پاکستان کے نامور لکھاری نسیم درمانوی’سید عارف نوناری نے لکھا ہے دیباچہ اخوت کے چئیرمین عالمی نوبل انعام یافتہ ڈاکڑ امجد ثاقب نے لکھا ہے جبکہ فلیپ مجیب الرحمن شامی ‘سہیل وڑائچ ‘اوریا مقبول جان ‘ایس ایم ظفر سابق وزیر قانون نے لکھے ہیں کتاب میں نارووال کی تاریخ ‘بزرگان دین ‘سیاسی تاریج ‘ادبی تاریخ ‘ادبی شخصیات’نارووال کی کلچرو ثقافت’مشہور قصبات کی تاریخ ‘نارووال میں ذاتوں کا پس منظر ‘کھیلوں میں نارووال کا کردار یعنی یہ نارووال کا انسکلو پیڈیا ہے جس میں نارووال کے تمام شعبہ جات کا مکمل احاطہ کیا گیاہے اس میں 60 صفحات رنگین تصاویر تمام شعبوں کی شامل کی گئ ہے یہ کتاب ریفرنس بک ہے کتاب کی اشاعت پر مصنفین نسیم درمانوی’سید عارف نوناری کو ملک کے نامور صحافیوں داشوروں کالم نگاروں نے منفرد اور تاریخی کام کرنے پراور دوسرا ایڈیشن شائع ہونے پر مبارکباد دی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں