567

پاکستان ٹیلیویژن سینٹر کی پہلی خاتون اناؤنسر، ڈرامہ نگار، ریڈیو براڈکاسٹر کنول نصیر کو اس دنیا سے رخصت ہوئے ایک سال بیت چکا

پاکستان ٹیلیویژن سینٹر کی پہلی خاتون اناؤنسر، ڈرامہ نگار، ریڈیو براڈکاسٹر کنول نصیر کو اس دنیا سے رخصت ہوئے ایک سال بیت چکا ہے۔ آج ان کی پہلی برسی منائی جا رہی ہے۔
کنول نصیر 23 جنوری 1943ء کو پاکستان کے شہر لاہور میں پیدا ہوئیں۔ ان کی والدہ ریڈیو پاکستان کی سابق براڈ کاسٹر اداکارہ موہنی حمید تھیں جو آپا شمیم کے نام سے بھی مشہور تھیں۔ کنول نصیر پی ٹی آئی کے سکریٹری اطلاعات احمد جواد کی ساس تھیں۔
کنول نصیر نے اپنے پیشہ وارانہ زندگی کا آغاز 6 یا 7 سال کی عمر میں ہی ریڈیو سے کیا تھا۔جب کہ وہ تقریباً 50 سال تک پاکستان ٹیلی ویژن کارپوریشن اور ریڈیو پاکستان سے وابستہ رہیں۔ کنول نصیر نے 26 نومبر 1964ء کو پی ٹی وی کے قیام کے وقت پہلی اناؤسمنٹ کی تھی اور ٹی وی سکرین پر پہلی بار یہ الفاظ ’میرا نام کنول نصیر ہے اور آج پاکستان میں ٹیلی ویژن آ گیا ہے، آپ کو مبارک ہو‘ بھی کنول نصیر نے ادا کیے۔ 26 نومبر 1964ء کو پی ٹی وی کی پہلی خاتون اناؤنسر بنیں، اس وقت ان کی عمر سترہ سال تھی۔کنول نصیر کی شادی کرنل نصیر سے ہوئی تھی۔ اس شادی سے ایک بیٹا ہے اور تین بیٹیاں ہیں۔
کنول نصیر 25 مارچ 2021ء کو دل کا دورہ پڑنے کے باعث پاکستان کےشہر اسلام آباد میں انتقال کر گئیں تھیں۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں