257

حلقہ بندیوں کی ابتداٸی تجاویز آویزاں کردی گٸ ہیں جن کے مطابق حلقہ این اے 97 سے یونین کونسل گوہر والا اور موضع یارا سلحہ نکال کر ڈھانڈلہ اور نوانی صاحبان کے حلقہ این اے 98 میں شامل کردیا گیا

صداقت ساجد مغل سے۔۔۔

بھکر سمیت ملک بھر میں حلقہ بندیوں کی ابتداٸی تجاویز آویزاں کردی گٸ ہیں
جن کے مطابق حلقہ این اے 97 سے یونین کونسل گوہر والا اور موضع یارا سلحہ نکال کر ڈھانڈلہ اور نوانی صاحبان کے حلقہ این اے 98 میں شامل کردٸیے گۓ
جبکہ این اے 98 سے موضع خانسر، موضع ڈگر شادہ نکال کر این اے 97 مستی خیل اور خنان خیل کے حلقہ این اے 97 میں شامل کردٸیے گۓ
امیر محمد خان حسن خیلی کے حلقہ سے یونین کونسل گوہر والا اور موضع یارا سلحہ نکال کر ملک غضنفر عباس چھینہ کے حلقہ میں شامل کردٸیے گۓ
جبکہ موضع خانسر اور موضع ڈگرشادہ پی پی 91 ملک غضنفر عباس چھینہ کے حلقہ سے نکال کر سعیداکبر خان نوانی کے دریا خان والے حلقہ پی پی 90 میں شامل کردٸیے گۓ
جبکہ پی پی 91 ملک غضنفر عباس چھینہ کے حلقہ سے بہل ڈگر قانوںگوٸی ، چونی ڈگر قانوںگوٸی ، 67 ٹی ڈی اے اور 57 ٹی ڈی اے قانوںگوٸی نکال کر پی پی 92 میں شامل کردٸیے گۓ
پی پی 89 امیر محمد حسن خیلی کے حلقہ سے یونین کونسل گوہر والا اور موضع یارا سلحہ نکالنے کے بعد میونسپل کمیٹی دلیوالہ شامل کردیا گیا
جبکہ پی پی 90 دریا خان سعید اکبر خان کے حلقہ سے میونسپل کمیٹی دلیوالہ نکال کر اس میں موضع خانسر اور موضع ڈگرشادہ شامل کردٸے گے
اس حلقہ بندی سے عوامی خدمت محاذ گروپ کو قومی و صوباٸی اسمبلی کی نشست پر تین سے چار ہزار ووٹوں کا فاٸدہ ملے گا
اس لیے قوی امکان ہے کہ نوانی اور نیازی گروپ دونوں اپیل میں جاٸیں گے
اپیلوں کا حتمی فیصلہ ہونے تک ضمنی الیکشن پرانی حلقہ بندیوں پر ہی ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں