281

بین الاقوامی سطح پر چنے اور دالوں کا کام کرنے والے تاجر کی پنجاب پلسسز ایکسپورٹ اینڈ امپورٹ ایسوسی ایشن کے سرپرست اعلی صدر حاجی عبدالستار ملک کی دعوت پر تھل آمد

دلےوالا (سپیشل رپورٹر) علاقہ تھل دلے والا و گردونواح میں چنے کی فصل کا پیداواری تخمینہ لگانے کے لیے کراچی سے چنےکا کام کرنے والے تاجروں کا ایک وفد جس میں ناصر پٹیل انور بھائی مدینہ دال ملز بلال مجید اسلم باوانی حیدرآباد سندھ سجاد علی عمران لاکھانی احمد پٹیل شامل تھے دلے والا میں ملکی و بین الاقوامی سطح پر چنے اور دالوں کا کام کرنے والے معروف تاجر پنجاب پلسسز ایکسپورٹ اینڈ امپورٹ ایسوسی ایشن کے سرپرست اعلی و تھل آڑھتیان کے صدر حاجی عبدالستار ملک کی دعوت پر پنجاب تشریف لائے جس کا مقصد تھل کے علاقہ میں جو ہرنولی جنڈاں والا دلے والا نور پور تھل حیدرآباد تھل کروڑ چوبارہ پر مشتمل ہے چنے کی پیداواری لاگت کا تخمینہ لگانا ہے تاکہ یہ اندازہ لگایا جائے کے علاقہ تھل میں کاشت چنا ملکی ضروریات کو کتنے فیصد پورا کر سکتا ہے کراچی کے تاجروں کے ساتھ دلےوالا کے معروف کاروباری تاجر حاجی محمد شفیع سیٹھ نوید احمد ملک سیٹھ نذیر احمد سیٹھ صغیر احمد طارق نزیر ملک رضوان بروکر اور شہروز بروکر پر مشتمل وفد نے تین روزہ دورہ میں علاقہ تھل کے چنے کی کاشت کرنے والے مختلف مقامات جھمٹ شمالی کلول شاہ والا پلواں نور پورتھل نواں گسو کاتیمار شیر گڑھ ماہنی حیدر آباد تھل کھیو نہوا جنجو شریف ماہنی ڈھنگانہ بھریڑی سعد والا نواں کوٹ قاضی آباد عنائت شاہ فتح پور پٹی پلندہ منکیرہ گلاب والا چوک اعظم فتح پورجوئیہ ریتڑی فاضل اور میانوالی کا علاقہ ہرنولی موڑ شامل ہیں کا دورہ کیا کئی مقامات پر فصل بہت اچھی کہیں درمیانی اور کئی مقامات پر فصل کمزور بھی نظر آئی مختلف مقامات پر ایک بوری فی ایکڑ سے تین بوری فی ایکڑ تک پیداوار متوقع ہے علاقہ تھل میں چنے کی بارانی و آبپاشی علاقوں میں پیداور تقریبا 36 لاکھ بوری پنجاب میں اور کل پاکستان میں دس لاکھ بوری سمیت مجموعی طور پاکستان میں چنے کی پیداور کا تخمینہ 46 لاکھ بوری لگایا گیا ہے یہ پیداواری تخمینہ سروے علاقہ تھل میں کاشت رقبہ اور اپنے تجربے اور ذہن کے مطابق لگایا گیا ہے اس میں ردو بدل کی گنجائش ہے ملک میں دال چنا اور بیسن کی ضروریات پوری کرنے کے لیے ڈیڑھ سے دو لاکھ ٹن چنا ہمیں امپورٹ کرنا پڑے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں