261

اینٹی کرپشن نے سرپم کورٹ آف پاکستان سے ضمانتیں خارج ہو نے پر سرکاری ریکارڈ میں ہیراپھیری کرنے والے گروہ کو گرفتار کر لیا

اینٹی کرپشن سرگودھانے سرپم کورٹ آف پاکستان سے ضمانتیں خارج ہو نے پر سرکاری ریکارڈ میں ہیراپھیری کرنے والے گروہ کو گرفتار کر لیا۔

اینٹی کرپشن سرگودھا نے حسن رضا وثیقہ نویس، شہزاد احمد پٹواری، محمد امیر پٹواری، محمد عباس سابقہ رجسٹری محرر اور محمد اشرف سابقہ رجسٹری محررکو سپریم کورٹ سے عبوری ضمانتیں خارج ہونے پرگرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق محمد فیاض نائب تحصیلدار، حسن رضاوثیقہ نویس، شہزاد احمد پٹواری، محمد امیر پٹواری، محمد عباس سابقہ رجسٹری محرر، محمد اشرف سابقہ رجسٹری محررنے مفادکنندہ سیف اللہ رانجھا سے ملی بھگت و جعل سازی کر کے سرکاری ریکارڈ میں ردوبدل اورسب رجسٹرار کے جعلی دستخط کرکے جائیداد اپنے نام ٹرانسفر کروائی جو انتقالات بعدازاں خارج کر دیئے گئے اس کے علاوہ ملزمان نے ملی بھگت کر کے سرکاری فیس کی مد میں خزانہ سرکارکو لاکھوں روپے کا نقصان پہنچایا۔ جس پر ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سرگودھانے ملزمان کے خلاف مقدمہ نمبر32/2018تھانہ اینٹی کرپشن سرگودھا میں درج کرنے کے احکامات دیئے۔دوران تفتیش ریکارڈ کی مکمل چھان بین کی گئی اور ریکارڈ کا پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی سے موازنہ بھی کروایا گیا جس سے ثابت ہوا کہ ملزمان نے جعلی سازی اور ملی بھگت کر کے سرکاری ریکارڈ میں ردوبدل کیا اور خزانہ سرکار کو لاکھوں روپے کا نقصان پہنچایا ہے۔ جس پر ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سرگودھا نے ملزم کو گرفتار کر کے چالان عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ملزمان نے گرفتاری سے بچنے کے لیے عدالت جناب سپیشل جج، اینٹی کرپشن سرگودھا سے عبوری ضمانتیں کروا لی، سپیشل جج کی عدالت سے ملزمان کی عبوری ضمانتیں خارج ہونے پر ملزمان نے لاہور ہائی کورٹ سے عبوری ضمانتیں کروائیں، اینٹی کرپشن سرگودھا کی تفتیشی ٹیم نے ہائی کورٹ لاہور میں ملزمان کے خلاف ثبوت پیش کیے جس پر عدالت عالیہ نے بھی ماسوائے الک ملزم کے باقی ملزمان کی عبوری ضمانتیں خارج کر دی تھیں۔جس کے بعد ملزم سیف اللہ رانجھا، ملزم حسن رضا وثیقہ نویس،ملزم شہزاد احمد پٹواری،ملزم محمد امیر پٹواری، ملزم محمد عباس سابقہ رجسٹری محرر اورملزم محمد اشرف سابقہ رجسٹری محررنے سپریم کورٹ سے عبوری ضمانتیں کروا لیں تھیں۔ جس پر عاصمہ اعجاز چیمہ، ریجنل ڈائریکٹر، اینٹی کرپشن سرگودھا کی سربراہی میں آج اینٹی کرپشن سرگودھا کی لیگل اور تفتیشی ٹیم نے عدالت عظمیٰ میں کیس کی مکمل پیروی کی اور ملزمان کے خلاف تمام ثبوت عدالت عظمیٰ میں پیش کیے جس پر عدالت عظمیٰ نے ملزم حسن رضا وثیقہ نویس،ملزم شہزاد احمد پٹواری،ملزم محمد امیر پٹواری، ملزم محمد عباس سابقہ رجسٹری محرر اورملزم محمد اشرف سابقہ رجسٹری محرر کی عبوری ضمانتیں خارج کر دیں جس پر اینٹی کرپشن سرگودھا کی ٹیم نے پانچ کس ملزمان کو گرفتار کر لیا جبکہ سیف اللہ رانجھا مفاد کنندہ کی گرفتاری کے لیے اینٹی کرپشن سرگودھا کی ٹیم چھاپے مار رہی ہے جس کو بھی بہت جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔گرفتار ملزمان سے مزید تفتیش جاری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں