234

آج ہر گھر میں، ہر دفتر میں، گلیوں اور بازاروں میں اگر کچھ ہے تو وہ سیاست ہے اور کچھ نہیں۔ ہم آنے والی نسل کو کیا دیں گے؟

کتنی ستم ظریفی ہے کہ اس ملک کے ساتھ اتنا بڑا کھیل کھیلا جارہا ہے کہ ریاست کی اہمیت کے بجائے سیاست کی اہمیت معصوم عوام کے ذہنوں میں بھر دی گئی ہے۔ جب کہ بیرونی دنیا تیزی سے ٹیکنالوجی بہت زیادہ کام کر رہی ہے، لیکن ہم کبھی بھی کاروبار، آنے والے معاشی مواقع و مسائل، وغیرہ کے بارے میں بات نہیں کرتے ۔ پاکستان کے نوجوانوں میں آج ایک ہی بحث ہے کہ تمہارا لیڈر برا ہے اور میرا لیڈر اچھا ہے، بلکہ مستقبل کے لائحہ عمل پر کوئی بات نہیں کررہا ہے۔ آج ہر گھر میں، ہر دفتر میں، گلیوں اور بازاروں میں اگر کچھ ہے تو وہ سیاست ہے اور کچھ نہیں۔ ہم آنے والی نسل کو کیا دیں گے؟ اچھی ریاست ہے یا گندی سیاست؟ اگر ہم دنیا سے مقابلہ کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں سیاست دانوں کے اس گھناؤنے کھیل سے باہر نکلنا ہوگا اور ملک کی بہتری اور اپنی نسل کے اچھے مستقبل کے لیے انکا ساتھ چھوڑنا ہوگا۔ اگر ہم نے ایسا نہیں کیا تو ہم ان کے اقتدار کو بچانے اور برقرار رکھنے کے لیے ہمیشہ سڑکوں پر ہوں گے۔ ہمیں غیر جانبدار بننے کے لیے بہترین پالیسی اختیار کرنی چاہیے۔ کیا ہم جانتے ہیں کہ ہم 233 ملین آبادی کے ساتھ دنیا میں 5ویں بڑے ہیں، ہم دنیا میں ٹیک لیبر کا تیسرا سب سے بڑا ذریعہ ہیں، ہم 88% انٹرنیٹ کی دستیابی کے ساتھ دنیا میں تیسرے نمبر پر انگریزی خواندہ آبادی ہیں اور کم از کم 64% آبادی 35 سال سے کم عمر کے ہیں۔ تو!!! ہم کیا کر رہے ہیں؟ ہم کہاں جا رہے ہیں؟ ہم اس ریاست کے ساتھ کیا کرنا چاہتے ہیں؟ ہم دنیا کا مقابلہ کیسے کریں گے؟ ہمارے منصوبے کیا ہیں؟ لہذا، غیر جانبدار رہیں اور حقیقت پسند بنیں کیونکہ آپ کا وقت اور توانائی دونوں اس ریاست کے لیے درکار ہیں۔ جزاک اللہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں