220

آبی محاذ پر پاکستان کو بڑی کامیابی مل گئی اور بھارت چناب پر متنازع منصوبے کا ڈیزائن بدلنے پر آمادہ ہو گیا‘ مذاکرات کے دوران پاکستان کا سندھ طاس معاہدے کے تحت مغربی دریاوں میں 3.6 ملین ایکڑ فٹ پانی کی فراہمی یقینی بنانے پر زور

نئی دہلی،اسلام آباد (آئی این پی)آبی محاذ پر پاکستان کو بڑی کامیابی مل گئی اور بھارت چناب پر متنازع منصوبے کا ڈیزائن بدلنے پر آمادہ ہو گیا‘ مذاکرات کے دوران پاکستان کا سندھ طاس معاہدے کے تحت مغربی دریاوں میں 3.6 ملین ایکڑ فٹ پانی کی فراہمی یقینی بنانے پر زور‘متنازعہ پکل دل منصوبے
پر 11000 ایکڑ فٹ پانی کا اضافی ذخیرہ سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی ہے‘ جس پر بھارت نے یقین دہانی کروائی کہ مون سون فلڈ سیزن کے بعد پاکستانی حکام کو متنازعہ منصوبوں کا دورہ کروایا جائیگا۔ منگل کو ذرائع کے مطابق پاکستان اور بھارت کے مابین آبی تنازعات پر 118 ویں دو روزہ اجلاس میں دونوں ممالک کی کمیشن کی سالانہ رپورٹ کا بھی جائزہ لیا گیا۔ متنازعہ منصوبوں پکل دل اور خار ہائیڈرو پاور پراجیکٹس کے ڈیزائن پر پاکستانی حکام نے اپنے اعتراضات بھارت کے سامنے رکھے جس پر بھارت نے پاکستان کو یقین دہانی کرائی کے مون سون کے فلڈ سیزن کے بعد پاکستانی حکام کو متنازعہ منصوبوں کا دورہ کروایا جائے گا۔ذرائع کے مطابق پاکستان کمیشن آف انڈس واٹر نے بھارت کو سندھ طاس معاہدے کے تحت مغربی دریاوں میں 3.6 ملین ایکڑ فٹ پانی کی فراہمی یقینی بنانے پر بھی زور دیتے ہوئے پاکستانی حکام نے بھارت کو آگاہ کیا کہ متنازعہ پکل دل منصوبے پر 11000 ایکڑ فٹ پانی کا اضافی ذخیرہ سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں